مسلسل 25 سال محنت کرکے ویرانے کو جنگل بنانے والے میاں بیوی

0 33

کرناٹک: 

بھارت کے رہائشی جوڑے نے 25 سال کی انتھک محنت سے 55 ایکڑ زرعی اراضی کو 300 ایکڑ وسیع جنگل میں تبدیل کردیا جہاں اب خوبصورت اور نایاب چرند پرند موجود ہیں۔اس بھارتی جوڑے کو جنگلی حیات اور فطرت سے محبت ہے اور اسی وجہ سے یہ کرناٹک میں ختم ہوتے جنگلات دیکھ کر 1991 میں امریکا سے بھارت منتقل ہوئے، یہاں آکرانہوں نے ایک بنجر زمین خریدی جس کا رقبہ 55 ایکڑ تھا اور یہاں کافی کے بیج کاشت کرنے کی کوشش کی گئی تھی جو ناکام ہوگئی تھی کیونکہ یہاں بارش بہت تیز ہوتی تھی اور اس جگہ کوئی بھی فصل کھڑی نہیں ہوسکتی تھی۔ لیکن دونوں نے اس جگہ پر جنگل بسانے کا فیصلہ کیا اور مقامی پودے لگانا شروع کردیئے جس سے کچھ ہی عرصے میں پودے پھلنے پھولنے لگے اور درخت تیزی سے بڑھنے لگے۔

1991 سے مسلسل 25 سال ان کی انتھک محنت سے اب یہ علاقہ گھنے جنگل میں تبدیل ہوچکا ہے جس کا رقبہ 55 ایکڑ تھا لیکن نہر کے دوسرے کنارے کسانوں کی زمینیں خریدنے کے بعد اب یہ جنگل 300 ایکڑ تک پھیل چکا ہے جو نایاب پرندوں، جانوروں اور درختوں کا مسکن ہے۔

اب اس جگہ کو سیو اینیمل سینکچوری (ایس اے آئی ) کا نام دیا گیا ہے جہاں جنگلی حیات کے سب رنگ موجود ہیں۔ ان میں سینکڑوں اقسام کے درخت اور پودے، 300 سے زائد اقسام کے پرندے جن میں نایاب پرندے بھی شامل ہیں۔ ایشیائی ہاتھی، بنگالی ٹائیگر، کئی طرح کے ہرن، سانپ ، بندر، اودبلاؤ، جنگلی بلیاں اور بہت سے پرندے موجود ہیں۔ بین الاقوامی ماہرین نے اس جگہ کو جنگلی حیات کا ایک اہم مقام قراردیا ہے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں مصنف سے زیادہ

Comments

Loading...